خبریںاقتصادٹیکنالوجیTop

70 ملین افغانی کی سرمایہ کاری کے ساتھ تین پوسٹل سروس کمپنیوں کو لائسنس جاری

 

کابل (بی این اے) وزارت مواصلات اور انفارمیشن ٹیکنالوجی نے آج تقریباً 70 ملین افغانی کی سرمایہ کاری کے ساتھ تین پوسٹل سروس کمپنیوں (موام، اکرم زادہ اور رحمان صمدی) کو آپریٹنگ لائسنس جاری کر دیے۔
باختر ایجنسی کے نامہ نگار کے مطابق اس موقع پر کابل میں ہونے والی ایک میٹنگ میں مواصلات اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے قائم مقام وزیر مولوی نجیب اللہ حقانی نے ان لائسنسوں کی مالیت اور ملک کی پوسٹل مارکیٹ میں ان کی ضرورت کے بارے میں معلومات فراہم کیں اور کہا کہ افغانستان کی پوسٹل سروسز 150 سال سے زائد تجربہ رکھتی ہیں۔
نجیب اللہ حقانی نے مزید کہا کہ گزشتہ 45 سالوں میں مختلف مسائل کی وجہ سے افغانستان کے ٹیلی کمیونیکیشن سیکٹر کو نقصان پہنچا، تاہم امارت اسلامیہ کی بحالی کے بعد شہریوں کو مختلف شعبوں بالخصوص ٹیلی کمیونیکیشن سیکٹر میں مزید سہولیات فراہم کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔
ان کے مطابق ملک کا مواصلاتی شعبہ ہر گزرتے دن کے ساتھ مضبوط ہو رہا ہے اور افغانستان کو اس شعبے میں اچھی کامیابیاں حاصل ہیں۔
انہوں نے یقین دلایا کہ امارت اسلامیہ اور خاص طور پر وزارت مواصلات اور انفارمیشن ٹیکنالوجی تمام پوسٹل کمپنیوں کی شراکت دار ہے اور کمپنیوں کے عہدیداروں سے کہا کہ وہ معیاری، قانونی، سستی ذمہ داری اور بروقت خدمات فراہم کریں۔
اس کے علاوہ موام کمپنی کے سی ای او محمد اسحاق تکل، اکرم زادہ کمپنی کے سی ای او ذکر اللہ پوبلے اور رحمان صمادی کمپنی کے سی ای او سمیع اللہ صمدی نے اپنی کمپنیوں کی سرگرمیوں اور منصوبوں اور سرمایہ کاری کے لیے مواقع کی فراہمی کے بارے میں معلومات فراہم کیں۔ انہوں نے امارت اسلامیہ افغانستان اور بالخصوص وزارت مواصلات اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کا شکریہ ادا کیا۔
انہوں نے امارت اسلامیہ افغانستان کے قوانین اور پالیسیوں کے مطابق عوام کو معیاری، قانونی، سستی اور معیاری خدمات فراہم کرنے کا وعدہ کیا۔
یاد رہے کہ ان تینوں کمپنیوں کو آپریٹنگ لائسنس جاری ہونے کے بعد ملک میں پوسٹل سروس کی فعال کمپنیوں کی تعداد 15 ہو گئی ہے۔

Show More

Related Articles

Back to top button