خبریںاقتصاد‏معاشرہ

پکتیا ، 13 ملین افغانی کی لاگت سے 7 ترقیاتی منصوبوں کا آغاز

 

کابل (بی این اے) صوبہ پکتیا کے صدر مقام گردیز اور زرمت اضلاع میں پانی کے انتظام اور زیر زمین پانی ذخیرہ کرنے کے لیے ڈیموں، آبی ذخائر، ریٹیننگ والز اور نہروں کی تعمیر کا کام شروع کر دیا گیا ہے۔
پکتیا کینال ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ مولوی محمد کریم فاتح نے باختر نیوز کو بتایا کہ یہ منصوبے اقوام متحدہ کے فوڈ اینڈ ایگریکلچر آرگنائزیشن (FAO) کی نگرانی میں اگلے چھ ماہ کے اندر مکمل کیے جائیں گے، جس سے تقریباً 500 افراد کو روزگار کی سہولت بھی فراہم کی گئی ہے۔
معلومات کے مطابق کوتے خیل آبی ذخائر سے علاقے کی تقریباً 6 ہزار ایکڑ اراضی سیراب ہوتی ہے اور اس کی صفائی کے بعد دیگر دیہات بھی سیراب ہوں گے۔
علاقے کے ایک رہائشی ملک نذیر خان نے پکتیا کینال ڈیپارٹمنٹ اور "FAO” تنظیم کے حکام کا شکریہ ادا کرتے ہوئے ان سے درخواست کی کہ وہ ضلع زرمت میں پانی ذخیرہ کرنے کے لیے ڈیموں، اور اسی طرح کے دیگر منصوبوں پر عمل درآمد کریں۔

Show More

Related Articles

Back to top button